Download Urdu Font

What are Collections?

Collections function more or less like folders on your computer drive. They are usefull in keeping related data together and organised in a way that all the important and related stuff lives in one place. Whle you browse our website you can save articles, videos, audios, blogs etc and almost anything of your interest into Collections.
Text Search Searches only in translations and commentaries
Verse #

Working...

Close
Al-Tawbah Al-Tawbah
  • النبا (The Great News, Tidings, The Announcement)

    40 آیات | مکی
    سورہ کا عمود اور سابق سورہ سے تعلق

    یہ سورہ سابق سورہ ۔۔۔ المرسلٰت ۔۔۔ کی توام سورہ ہے۔ دونوں کے عمود میں کوئی بنیادی فرق نہیں ہے۔ جس طرح اس میں آفاقی، تاریخی اور انفسی دلائل سے یہ حقیقت ثابت کی گئی ہے کہ اس دنیا کے بامقصد و باغایت ہونے کا لازمی تقاضا ہے کہ یہ ایک دن ختم ہو اور اس کے بعد ایک ایسا فیصلہ کا دن آئے جس میں نیکوکاروں کو ان کی نیکیوں کا صلہ ملے اور جو مجرم ہوں وہ اپنے کیے کی سزا بھگتیں اسی طرح اس سورہ میں بھی ایک یوم الفصل کا اثبات فرمایا ہے جس میں خدا کے باغی اپنی سرکشی کی سزا بھگتیں گے اور خدا ترس اپنی خدا ترسی کا انعام پائیں گے۔ استدلال اس میں خدا کی ربوبیت کے آثار و شواہد سے ہے جس سے آسمان و زمین کا چپہ چپہ معمور ہے۔

    لب و لہجہ دونوں سورتوں کا بالکل ایک ہی ہے۔ کلام استفہام اقراری کے انداز میں شروع ہوا ہے جو ان مستکبرین و مکذبین کو خطاب کرنے کے لیے مخصوص ہے جو بالکل بدیہی حقائق کو جھٹلانے کے درپے ہوں۔ دلائل کے پہلو بہ پہلو زجر و ملامت اور تہدید و توبیخ ہر آیت میں نمایاں ہے۔ اہل ایمان کے لیے جو بشارت ہے وہ بھی گویا ان مکذبین کی تہدید ہی کے پہلو سے آئی ہے کہ وہ اس کو سامنے رکھ کر اپنے انجام بد کا موازنہ کر لیں۔

  • النبا (The Great News, Tidings, The Announcement)

    40 آیات | مکی
    المرسلات - النبا

    یہ دونوں سورتیں اپنے مضمون کے لحاظ سے توام ہیں۔ پہلی سورہ آفاق کے آثار و شواہد، تاریخ کے حقائق اور انسان کی خلقت میں خدا کی قدرت و حکمت کی نشانیوں سے قیامت کو ثابت کرتی ہے، دوسری میں یہی دعویٰ آفاق میں بالخصوص خدا کی ربوبیت کے آثار و شواہد سے ثابت کیا گیا ہے۔ دونوں میں دلائل کے پہلو بہ پہلو زجر و توبیخ اور تہدید و ملامت، ہر آیت سے نمایاں ہے۔

    روے سخن قریش کے سرداروں کی طرف ہے اور اِن کے مضمون سے واضح ہے کہ پچھلی سورتوں کی طرح یہ بھی ام القریٰ مکہ میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی دعوت کے مرحلۂ انذار عام میں نازل ہوئی ہیں۔

    دونوں سورتوں کا موضوع قیامت کا اثبات اور اُس کے حوالے سے قریش کو انذار ہے۔

  • In the Name of Allah
  • Click verse to highight translation
    Chapter 078 Verse 001 Chapter 078 Verse 002 Chapter 078 Verse 003 Chapter 078 Verse 004 Chapter 078 Verse 005
    Click translation to show/hide Commentary
    یہ لوگ کس چیز کے بارے میں باہم پوچھ رہے ہیں؟
    اصل میں لفظ ’تَسَاءُ ل‘ آیا ہے۔ اِس کے معنی آپس میں کسی چیز کے بارے میں پوچھ گچھ کرنے کے ہیں۔ یہ بعض اوقات محض سخن گستری اور استہزا کے لیے بھی ہوتی ہے۔ یہاں یہ اِسی مفہوم میں ہے، یعنی کس چیز کا مذاق اڑا رہے ہیں اور اُس کے بارے میں چندرا چندرا کر پوچھ رہے ہیں؟ استاذ امام لکھتے ہیں: ’’اِس سوال سے اِس سورہ کا آغاز اِس کے مزاج کا پتا دے رہا ہے کہ اِس میں اُن کو بتایا جائے گا کہ جس چیز کا وہ مذاق اڑا رہے ہیں، وہ مذاق اڑانے اور ہنسی دل لگی کی چیز نہیں، بلکہ وہ سوچیں تو اُن کے لیے سر پیٹنے اور خون کے آنسو بہانے کی چیز ہے۔‘‘(تدبرقرآن ۹ /۱۵۷)  
    کیا اُس بڑی خبر کے بارے میں۔
    یہاں اگرچہ اصل میں حرف استفہام نہیں ہے، لیکن معنوی لحاظ سے یہ اُسی استفہام کے تحت ہے جو اِس سے پہلے آیا ہے۔
    جس کے متعلق اِن میں سے ہر ایک اپنی سی کہہ رہا ہے۔
    مطلب یہ ہے کہ اُسے جھٹلانے کے لیے اِن میں سے کوئی کچھ کہہ رہا ہے اور کوئی کچھ۔ یہ اُس کے بارے میں سخت تناقض فکر میں مبتلا ہیں۔
    (اِن کی یہ باتیں کچھ نہیں)، ہرگز نہیں۔ یہ عنقریب جان لیں گے۔
    n/a
    (ہم) پھر (کہتے ہیں کہ) ہرگز نہیں، یہ عنقریب جان لیں گے۔
    یعنی یہاں بھی جان لیں گے ،جب اتمام حجت کے بعد ہمارا فیصلہ صادر ہو جائے گا اور وہاں بھی، جہاں پکڑ بلائے جائیں گے۔


  •  Collections Add/Remove Entry

    You must be registered member and logged-in to use Collections. What are "Collections"?



     Tags Add tags

    You are not authorized tag these entries.



     Comment or Share

    Join our Mailing List