Download Urdu Font

What are Collections?

Collections function more or less like folders on your computer drive. They are usefull in keeping related data together and organised in a way that all the important and related stuff lives in one place. Whle you browse our website you can save articles, videos, audios, blogs etc and almost anything of your interest into Collections.
Text Search Searches only in translations and commentaries
Verse #

Working...

Close
Al-Tawbah Al-Tawbah
  • الحاقۃ (The Sure Reality)

    52 آیات | مکی
    سورہ کا عمود اور نظام

    اس سورہ پر تدبر کی نظر ڈالیے تو اس میں اور سابق گروپ کی سورۂ واقعہ میں مختلف پہلوؤں سے بڑی گہری مشابہت نظر آئے گی، مثلاً

    ۔۔۔ دونوں میں قیامت کا اثبات اور اس کے ہول کی تصویر ہے۔

    ۔۔۔ دونوں میں اصحاب الیمین اور اصحاب الشمال کے انجام کی تفصیل ہے۔

    ۔۔۔ دونوں میں قرآن مجید کی صداقت و حقانیت پر قسم کھائی گئی ہے۔

    سابق سورہ ۔۔۔ القلم ۔۔۔ سے بھی اس کو بڑی گہری مناسبت ہے۔ اس کا عمود وہی ہے جو سابق سورہ کا ہے یعنی اثبات عذاب و قیامت۔ البتہ نہج استدلال دونوں میں الگ الگ ہے۔ قرآن کی عظمت و صداقت جس طرح سابق سورہ میں واضح کی گئی ہے اور اس کی تکذیب کے نتائج سے ڈرایا گیا ہے اسی طرح اس سورہ میں بھی یہی مضمون زیربحث آیا ہے۔ بس یہ فرق ہے کہ سابق سورہ میں یہ مضمون تمہید کی حیثیت سے ہے اور اس سورہ میں خاتمہ کے طور پر اور تذکیر و تعلیم کے پہلو سے ان دونوں اسلوبوں کی اہمیت الگ الگ ہے۔

  • الحاقۃ (The Sure Reality)

    52 آیات | مکی
    الحاقۃ - المعارج

    یہ دونوں سورتیں اپنے مضمون کے لحاظ سے توام ہیں۔ پہلی سورہ دنیا اور آخرت میں جس عذاب سے قریش کو متنبہ کرتی ہے،دوسری میں اُسی کا مذاق اڑانے اور اُس کے لیے جلدی مچانے والوں کو اُن کے انجام سے خبردار کیا گیا ہے۔ دونوں میں روے سخن قریش کے سرداروں کی طرف ہے اور اِن کے مضمون سے واضح ہے کہ پچھلی سورتوں کی طرح یہ بھی ام القریٰ مکہ میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی دعوت کے مرحلۂ انذار میں نازل ہوئی ہیں۔

    پہلی سورہ — الحاقۃ — کا موضوع قیامت میں جزا و سزا کا اثبات، اُس کے حقائق کا بیان اور اُس کے بارے میں قرآن کے انذار کو جھٹلانے کے نتائج سے اپنے مخاطبین کو متنبہ کرنا ہے۔

    دوسری سورہ — المعارج — کا موضوع اِنھی نتائج کو استہزا کا نشانہ بنانے اور اِن کے لیے جلدی مچانے والوں کو اُن کے انجام سے خبردار کرنا، پیغمبر کو اُن کے مقابلے میں صبر کی تلقین کرنا اور اُنھیں یہ بتانا ہے کہ جنت حسن عمل کی جزا ہے۔ اِس سے محروم کوئی شخص، خواہ عرب و عجم کے صنادید میں سے کیوں نہ ہو، خدا کی اِس ابدی بادشاہی میں ہرگز داخل نہیں ہو سکتا۔

  • In the Name of Allah
  • Click verse to highight translation
    Chapter 069 Verse 001 Chapter 069 Verse 002 Chapter 069 Verse 003
    Click translation to show/hide Commentary
    ہونی شدنی!
    اصل میں لفظ ’اَلْحَآقَّۃُ‘ آیا ہے۔ یہ قیامت کے ناموں میں سے ہے۔ اِس کے معنی ہیں: وہ چیز جو ہو کر رہے، جس کا واقع ہونا عقلی اور اخلاقی لحاظ سے لازم ہو، جو بالکل اٹل اور قطعی ہو۔ یہ ایک ہی لفظ یہاں جملہ کے قائم مقام ہو کر آیا ہے۔ استاذ امام لکھتے ہیں: ’’...یہ اسلوب بیان اُس وقت اختیار کیا جاتا ہے، جب مخاطب، خاص طور پر غافل مخاطب کو ہڑبڑا دینا مقصود ہو۔ ایسی صورت میں صرف مبتدا کا ذکر کافی ہوتا ہے،خبر کی ضرورت نہیں ہوتی تاکہ مخاطب کی پوری توجہ مبتدا ہی پر مرکوز ہو جائے۔ اِس طرح جملے میں جو ابہام پیدا ہوتا ہے، وہ مخاطب کی توجہ جذب کرنے کا باعث بنتا ہے۔‘‘ (تدبرقرآن۸/ ۵۴۱)  
    کیا ہے ہونی شدنی!
    یہ سوال قیامت کے ہول، دہشت اور بے پناہی کی تعبیر کے لیے ہے۔
    اور تم کیا جانو کہ کیا ہے وہ ہونی شدنی!
    n/a


  •  Collections Add/Remove Entry

    You must be registered member and logged-in to use Collections. What are "Collections"?



     Tags Add tags

    You are not authorized tag these entries.



     Comment or Share

    Join our Mailing List