Download Urdu Font

What are Collections?

Collections function more or less like folders on your computer drive. They are usefull in keeping related data together and organised in a way that all the important and related stuff lives in one place. Whle you browse our website you can save articles, videos, audios, blogs etc and almost anything of your interest into Collections.
Text Search Searches only in translations and commentaries
Verse #

Working...

Close
Al-Tawbah Al-Tawbah
  • الواقعۃ (The Inevitable, The Event)

    96 آیات | مکی

    سورہ کا عمود اور سابق سورتوں سے تعلق

    یہ اس گروپ کی ساتویں سورہ ہے جس پر گروپ کی مکی سورتیں تمام ہوئیں۔ اس میں اس ساری بحث کا خلاصہ سامنے رکھ دیا ہے، جو جزاء و سزا سے متعلق، سورۂ قٓ سے لے کر سورۂ رحمٰن تک ہوئی ہے۔ پچھلی سورتوں میں اس موضوع کے تمام اطراف، آفاق و انفس اور عقل و فطرت کے دلائل کی روشنی میں، زیربحث آئے ہیں، اس سورہ میں دلائل کی وضاحت کے بجائے اصل نتیجہ سے قریش کے مستکبرین کو آگاہ فرمایا گیا ہے کہ قیامت ایک امرشدنی ہے جس میں ذرا شبہے کی گنجائش نہیں ہے۔ تمہیں لازماً ایک ایسے جہان سے سابقہ پیش آنے والا ہے جس میں عزت و ذلت کے اقدار اور پیمانے ان اقدار اور پیمانوں سے بالکل مختلف ہوں گے جو اس جہان میں معروف ہیں۔ وہاں عزت و سرفرازی ان کے لیے ہو گی جنھوں نے اس دنیا میں ایمان اور عمل صالح کی کمائی کی ہو گی، وہ مقربین اور اصحاب الیمین کے درجے پائیں گے۔ جنت کی تمام کامرانیاں انہی کا حصہ ہوں گی۔ رہے وہ جو اسی دنیا کو سب کچھ سمجھ بیٹھے ہیں اور اسی کے عشق میں مگن ہیں وہ اصحاب الشمال میں ہوں گے اور ان کو دوزخ کے ابدی عذاب سے سابقہ پیش آئے گا۔

  • الواقعۃ (The Inevitable, The Event)

    96 آیات | مکی
    الواقعۃ

    یہ ایک منفرد سورہ ہے جس پر اِس باب کی مکی سورتیں ختم ہوجاتی ہیں۔ اِس میں اُس تمام بحث کا خلاصہ سامنے رکھ دیا ہے جو سورۂ ق سے سورۂ رحمن تک جزا و سزا سے متعلق ہوئی ہے۔ ق سے رحمن تک عقل و فطرت، انفس و آفاق اور انسانی تاریخ میں خدا کی دینونت کے ظہور سے ایک روز جزا کے واقع ہونے پر استدلال کیا گیا ہے۔اِس سلسلے کی آخری سورہ سورۂ رحمن ہے، جس میں اِس کے ساتھ انذار و بشارت کا مضمون بھی پوری طرح نمایاں ہو گیا ہے۔ یہی مضمون اِس سورہ میں اِس کی تمام تفصیلات کے ساتھ پایۂ تکمیل کو پہنچا ہے۔ اِس لحاظ سے یہ پچھلی
    سورتوں کا تکملہ و تتمہ ہے۔

    اِس کے مخاطب قریش کے متکبرین ہیں جنھیں خبردار کیا گیا ہے کہ قیامت ایک شدنی امر ہے۔ یہ ہر حال میں واقع ہو جائے گی۔ تمھیں لازماًایک ایسی دنیا میں جینے کے لیے اٹھنا ہے، جہاں عزت و ذلت کے پیمانے بدل چکے ہوں گے۔ عزت اور سرفرازی وہاں سابقین اور اصحاب الیمین کے لیے ہوگی اور متکبرین اصحاب الشمال ہوں گے جن کے لیے دوزخ کا ابدی عذاب ہے۔

    اِس کے مضمون سے واضح ہے کہ ام القریٰ مکہ میں یہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی دعوت کے مرحلۂ انذار عام میں نازل ہوئی ہے۔

  • In the Name of Allah
  • Click verse to highight translation
    Chapter 056 Verse 001 Chapter 056 Verse 002 Chapter 056 Verse 003 Chapter 056 Verse 004 Chapter 056 Verse 005 Chapter 056 Verse 006 Chapter 056 Verse 007
    Click translation to show/hide Commentary
    (یہ اُس دن کو یاد رکھیں) جب واقع ہونے والی واقع ہو جائے گی۔
    یعنی قیامت، جس کے دلائل پچھلی سورتوں میں بیان ہو چکے ہیں۔
    اُس کے واقع ہو جانے میں کچھ جھوٹ نہیں ہے۔
    اصل میں لفظ ’کَاذِبَۃٌ‘ آیا ہے۔ یہ ہمارے نزدیک ’عاقبۃ‘ اور ’عافیۃ‘ کی طرح مصدر ہے۔ ہم نے ترجمہ اِسی کے لحاظ سے کیا ہے۔
    وہ گرانے والی اور اٹھانے والی ہو گی۔
    یعنی جو آج سربلند ہیں، اُن میں سے بہت سے پست ہو جائیں گے اور جو پستی اور ذلت میں پڑے ہوئے ہیں، وہ اگر ایمان اور اعمال صالحہ کا سرمایہ رکھتے ہوں گے تو سربلند ہوجائیں گے۔ آگے اِسی بلندی اور پستی کی تفصیل ہے۔
    (اُس دن) جب زمین ہلا ڈالی جائے گی۔
    n/a
    اور پہاڑ بالکل ریزہ ریزہ کر دیے جائیں گے۔
    n/a
    اِس طرح کہ پراگندہ غبار بن کر رہ جائیں گے۔
    n/a
    (اُس دن) تم تین گروہوں میں تقسیم ہو جاؤ گے۔
    n/a


  •  Collections Add/Remove Entry

    You must be registered member and logged-in to use Collections. What are "Collections"?



     Tags Add tags

    You are not authorized tag these entries.



     Comment or Share

    Join our Mailing List