Download Urdu Font

What are Collections?

Collections function more or less like folders on your computer drive. They are usefull in keeping related data together and organised in a way that all the important and related stuff lives in one place. Whle you browse our website you can save articles, videos, audios, blogs etc and almost anything of your interest into Collections.

saving...

saving...

Loading...

Administrator Profile

Administrator

  [email protected]
Author's Bio
Humble slave of Allah!!!
Visit Profile
قانونِ اتمامِ حجت اور اس کے اطلاقات: نمایاں اعتراضات کا جائزہ (۳) (2/2) | اشراق
Font size +/-

قانونِ اتمامِ حجت اور اس کے اطلاقات: نمایاں اعتراضات کا جائزہ (۳) (2/2)

قتل کی سزا رسول کے اتمام حجت کے بعد شرک پر اصرار کرنے کے جرم کے ساتھ خاص ہے:
اس سے معلوم ہوا کہ رسول کے اتمام حجت کے بعد اس کے منکرین کے قتل کی سزا شرک کے ساتھ مخصوص ہے۔ اس قانون کی بنیاد اللہ تعالیٰ کا یہ ارشاد ہے:

اِنَّ اللّٰہَ لَا یَغْفِرُ اَنْ یُّشْرَکَ بِہٖ وَیَغْفِرُ مَا دُوْنَ ذٰلِکَ لِمَنْ یَّشَآءُ وَمَنْ یُّشْرِکْ بِاللّٰہِ فَقَدِ افْتَرآی اِثْمًا عَظِیْمًا.(النساء ۴: ۴۸)
’’اللہ اِس بات کو نہیں بخشے گا کہ (جانتے بوجھتے کسی کو) اُس کا شریک ٹھیرایا جائے۔ اِس کے نیچے، البتہ جس کے لیے جو گناہ چاہے گا، (اپنے قانون کے مطابق)بخش دے گا، اور (اِس میں تو کوئی شبہ ہی نہیں کہ) جو اللہ کا شریک ٹھیراتا ہے، وہ ایک بہت بڑے گناہ کا افترا کرتا ہے۔‘‘

یہ قیامت کبریٰ کا بیان ہے۔ دنیا میں رسولوں کے اتمام حجت کے بعد جو قیامت صغریٰ برپا ہوتی ہے اس کا مقصد بھی قیامت کبریٰ کا منظر قائم کرنا ہوتاہے، چنانچہ قیامت صغریٰ کے ضوابط بھی وہی مقرر کیے گئے ہیں جو قیامت کبریٰ کے ہیں۔ شرک کی معافی قیامت کبریٰ میں بھی نہیں ہے، اس لیے اس کی کوئی رعایت یہاں بھی نہیں دی گئی۔ چنانچہ دنیا میں بھی مشرکین جن پر اتمام حجت ہو چکا ہو، کے لیے بھی یہی حکم دیا گیا کہ:

فَاقْتُلُوا الْمُشْرِکِیْنَ حَیْثُ وَجَدْتُّمُوْھُمْ وَخُذُوْھُمْ وَاحْصُرُوْھُمْ وَاقْعُدُوْا لَھُمْ کُلَّ مَرْصَدٍ فَاِنْ تَابُوْا وَاَقَامُوا الصَّلٰوۃَ وَاٰتَوُا الزَّکٰوۃَ فَخَلُّوْا سَبِیْلَھُمْ اِنَّ اللّٰہَ غَفُوْرٌ رَّحِیْمٌ.(التوبہ ۹: ۵ )
’’تو اِن مشرکوں کو جہاں پاؤ، قتل کرو اور (اِس مقصد کے لیے) اِن کو پکڑو، اِن کو گھیرو اور ہر گھات کی جگہ اِن کی تاک میں بیٹھو۔پھراگر یہ توبہ کر لیں اور نمازکا اہتمام کریں اور زکوٰۃ ادا کریں تو اِن کی راہ چھوڑ دو۔ یقیناًاللہ بخشنے والا ہے، اُس کی شفقت ابدی ہے۔‘‘

رسولوں کی جتنی اقوام پر استیصال کا عذاب آیا، ان تمام کی تباہی کی وجہ اتمام حجت کے بعد شرک پر اصرار تھا۔ سورۂ اعراف میں دیکھیے ہر رسول اپنی قوم کو ایک ہی پیغام دے رہا ہے کہ شرک چھوڑ کر ایک خدا کو مانو۔ چنانچہ تقریباً ہر رسول کی زبان سے یہ آیت قرآن نے نقل کی ہے:

یٰقَوْمِ اعْبُدُوا اللّٰہَ مَالَکُمْ مِّنْ اِلٰہٍ غَیْرُہٗ.(۷: ۶۵)
’’اے میری قوم کے لوگو، اللہ کی بندگی کرو، اُس کے سوا تمھارا کوئی معبود نہیں ہے۔‘‘

اس سے یہ واضح ہو جاتا ہے کہ اہل کتاب کو اگر استیصال کی سزا نہیں دی گئی، تو وجہ یہ ہے کہ وہ سب کے سب مشرک نہیں تھے۔ اس کا ثبوت یہ بھی ہے کہ جب اہل کتاب کے ایک گروہ نے شرک اختیار کیا تو ان پر بھی استیصال کا عذاب ہی آیا، یعنی اس وقت جب انھوں نے بچھڑے کو معبود بنا لیا تھا۔ اسی طرح تاریخ کے کسی بھی دور میں جب کبھی انھوں نے شرک اختیار کیا تو تنبیہی عذابوں کے بعد قتل کا عذاب ہی ان پر آتا رہا۔ لیکن ہوتا یہ تھا کہ قتل کا عذاب مسلط ہو جانے کے بعد وہ متنبہ ہو جاتے، توبہ اور رجوع کرتے تھے، توحید اور اطاعت کی طرف لوٹ آتے، اس لیے قتل کا عذاب پوری قوم کے استیصال کی صورت اختیار نہیں کر لیتا تھا۔ قتل کا عذاب جب آندھی طوفان یا زلزلے جیسی قدرتی طاقتوں کے بجاے انسانی ہاتھوں سے دیا جا رہا ہو تو اس میں یہ ضروری نہیں ہے کہ سب کے سب مشرکین کا بیک قلم خاتمہ عذاب کی پہلی شکل کی طرح ہوجائے۔ انسانی ہاتھوں سے مسلط کردہ اس قتل و غارت میں توبہ کرنے کی گنجایش مل جاتی ہے، جیسا کہ سورۂ توبہ میں مشرکین عرب پر آخری عذاب کے طور پر جب قتال کا حکم آیا تو اس کے لیے قید و بند کا بھی ایک بندوبست کرنے کا حکم دیا گیا تھا اور آخر تک توبہ قبول کرنے کا موقع دیا گیا:

فَاِذَا انْسَلَخَ الْاَشْھُرُ الْحُرُمُ فَاقْتُلُوا الْمُشْرِکِیْنَ حَیْثُ وَجَدْتُّمُوْھُمْ وَخُذُوْھُمْ وَاحْصُرُوْھُمْ وَاقْعُدُوْا لَھُمْ کُلَّ مَرْصَدٍ فَاِنْ تَابُوْا وَاَقَامُوا الصَّلٰوۃَ وَاٰتَوُا الزَّکٰوۃَ فَخَلُّوْا سَبِیْلَھُمْ اِنَّ اللّٰہَ غَفُوْرٌ رَّحِیْمٌ.(التوبہ ۹: ۵)
’’(بڑے حج کے دن) اِس (اعلان براء ت) کے بعد جب حرام مہینے گزر جائیں تو اِن مشرکوں کو جہاں پاؤ، قتل کرو اور (اِس مقصد کے لیے) اِن کو پکڑو، اِن کو گھیرو اور ہر گھات کی جگہ اِن کی تاک میں بیٹھو۔ پھر اگر یہ توبہ کر لیں اور نمازکا اہتمام کریں اور زکوٰۃ ادا کریں تو اِن کی راہ چھوڑ دو۔ یقیناًاللہ بخشنے والا ہے، اُس کی شفقت ابدی ہے۔‘‘

چنانچہ صحابہ نے مشرکین عرب کے ساتھ یہی کیا، مشرکین عرب کے لیے اسلام یا موت کے سوا کوئی تیسرا انتخاب نہیں تھا:

قُلْ لِّلْمُخَلَّفِیْنَ مِنَ الْاَعْرَابِ سَتُدْعَوْنَ اِلٰی قَوْمٍ اُولِیْ بَاْسٍ شَدِیْدٍ تُقَاتِلُوْنَھُمْ اَوْ یُسْلِمُوْنَ فَاِنْ تُطِیْعُوْا یُؤْتِکُمُ اللّٰہُ اَجْرًا حَسَنًا وَاِنْ تَتَوَلَّوْا کَمَا تَوَلَّیْتُمْ مِّنْ قَبْلُ یُعَذِّبْکُمْ عَذَابًا اَلِیْمًا.(الفتح ۴۸: ۱۶)
’’یہ جو اہل بدو میں سے پیچھے چھوڑ دیے گئے تھے، اِن سے کہنا کہ عنقریب تمھیں ایسے لوگوں سے لڑنے کے لیے بلایا جائے گا جو بڑے زور آور ہیں۔ تم اُن سے لڑو گے یا وہ اسلام قبول کر لیں گے۔ پھر اگر تم نے حکم کی اطاعت کی تو اللہ تمھیں اچھا اجر دے گا اور اگر (کہیں اُس وقت بھی) سرتابی کی،جیسے پہلے سرتابی کر چکے ہو تو اللہ تم کو دردناک عذاب سے دوچار کر دے گا۔‘‘

خلاصۂ کلام یہ ہے کہ شرک کرنے کے باوجود بھی بنی اسرائیل کے مکمل استیصال کی نوبت نہیں آئی، وجہ یہ تھی کہ قتل و اسیری کا عذاب آتے ہی انھیں تنبیہ ہو جاتی، ایمان و عمل کی کوتاہیاں دور کرتے، یا کم از کم توحید بحال کرتے اور یوں وہ سارے کے سارے قتل ہونے سے بچ جاتے تھے۔
قرآن مجید کی رو سے ہم جانتے ہیں کہ مشرکین عرب کا بھی یہ حال تھا کہ جب کسی سخت آفت میں گرفتار ہو جاتے، تو سارے معبودان باطل کو بھلا کر ایک خدا کو پکارنے لگتے تھے:

قُلْ مَنْ یُّنَجِّیْکُمْ مِّنْ ظُلُمٰتِ الْبَرِّ وَالْبَحْرِ تَدْعُوْنَہٗ تَضَرُّعًا وَّخُفْیَۃً لَئِنْ اَنْجٰنَا مِنْ ھٰذِہٖ لَنَکُوْنَنَّ مِنَ الشّٰکِرِیْنَ.(الانعام ۶: ۶۳)
’’ان سے پوچھو کہ بحروبر (میں آفات و مصائب) کی تاریکیوں سے کون تمھیں بچاتا ہے، جبکہ تم گڑگڑا کر اور چپکے چپکے اُسے پکار رہے ہوتے ہو کہ اگر اُس نے اِس مصیبت سے ہمیں بچا لیا تو ہم ضروراُس کے شکرگزار بندے بن کر رہیں گے؟‘‘

کچھ ایسے ہی رویے کا اظہار اہل کتاب سے بھی ہوتا تھا۔ جب وہ اپنی ایمان و عمل کی کوتاہیوں کی وجہ سے وہ کسی بڑی مصیبت کا شکارہو جاتے تو رجوع کر لیتے اور مصیبت سے نجات پا جاتے۔
[باقی]

____________



 Collections Add/Remove Entry

You must be registered member and logged-in to use Collections. What are "Collections"?



 Tags Add tags

You are not logged in. Please login to add tags.


Join our Mailing List