میری نوا کا ثبات ، اشہد ان لا الٰہ قلب و نظر کی حیات ، اشہد ان لا الٰہ عالم نو ہے مگر آج بھی ہوں نغمہ زن توڑ کے لات و منات ، اشہد ان لا الٰہ شوکت فغفور و کے ، سلطنت روم و رے موت ہے اِس کی برات ، اشہد ان لا الٰہ